Urdu Article

بڑھاپا

بوڑها ہونا بڑا دلچسپ کام ہے لیکن اس میں خرابی یہ ہے کہ اس کے لیے بہت ویٹ کرنا پڑتا ہے. بڑهاپے میں ویسے تو کئی ایسی بیماریاں ہیں جو اپنا گهر سمجه کے پاس رہنے آجاتی ہیں لیکن نصیحت ان میں سب سے خطرناک بیماری ہے جو خودبخود لگ جاتی ہے. اگر کوئی بوڑها نصیحتیں نہیں کرتا تو یقین کریں یا تو وہ بوڑها نہیں ہے یا پهر اس کی زبان نہیں ہے. ویسے دیہاتی بوڑهے تو اتنے ٹیلنٹڈ ہیں کہ اشاروں سے بهی نصیحتیں کرلیتے ہیں. بالکہ ان کے پاس تو اتنا تجربہ ہے کہ آنکهوں آنکهوں میں ہی پوری بات کہ دیتے ہیں. مجهے بوڑهوں سے ایک ہی شکوہ ہے کہ یہ خود ساری زندگی تجربات کرتے رہتے ہیں اور جب ان تجربات کے بولنے کا وقت آتا ہے تب ان کی یا تو زبان ساته نہیں دیتی یا پهر سانس. یورپین عوام کے خوش وخرم رہنے کی ایک وجہ یہ بهی ہے کہ یہ بزرگوں کو اولڈ ہومز میں چهوڑ آتے ہیں تاکہ انہیں ہر روز صبح دوپہر شام نصیحتوں کے کیپسول نہ نگلنے پڑیں. ویسے ایک بات سمجه نہیں آئی کہ بوڑهے لوگ بچوں کی طرح حرکتیں کرنے لگتے ہیں تو یہ بچے لوگ بوڑهوں جیسی حرکتیں کیوں نہیں کرتے میرا مطلب ہے یہ کہیں آرام سے کیوں نہیں بیٹه سکتے.. ویسے ہماری ذاتی تحقیق کے مطابق بے بی سے بابا بننے کے درمیانی عرصے کو زندگی کہتے ہیں یعنی “ی” سے “الف” تک سفر، ہمارے ہاں اکثر گهروں میں بزرگ اس لیے رکهے جاتے ہیں تاکہ وقتا فوقتا ان کے مشوروں کے مخالف کام کیا جائے،

پچهلے دنوں ہمارے ایک پیارے سے دوست جو ابهی شدید بزرگ ہیں مجه سے بولے کہ
“میں ایک تنظیم بنانا چاہتا ہوں جو حقوق بزرگاں کے لیے کام کرے گی جس میں سب 70 سال سے اوپر والے بزرگ ہوں گے اور کسی جوان کو ہمارے پاس آنے کی اجازت نہیں ہوگی”
میں نے بهی بول دیا
“بابا جی لیکن اگر کسی بزرگ کو واش روم آگیا تو کیا کریں گے”
وہ دن اور آج کا دن بابا جی ہزار بار بار معافی مانگنے کے باوجود مجه سے نہیں بولے..
پہلے مجهے دو قسم کے بزرگ اچهے لگتے تهے ایک سگریٹ حقہ پینے والے دوسرے پیار محبت کی باتیں کرنے والے، اب مجهے ایک ہی قسم کے بزرگ اچهے لگتے ہیں سگریٹ پیتے ہوئے پیار محبت کی باتیں کرنے والے…
میں نے سنا ہے عورتیں بهی بوڑهی ہوتی ہیں لیکن آج تک کوئی بوڑهی عورت میں نے دیکهی نہیں. عورتوں کے بوڑها نہ ہونے کی ایک وجہ یہ بهی ہے یہ کبهی مانتی ہی نہیں کہ بوڑهی ہو گئی ہیں. ان کے بس میں ہو تو کفن بهی پسندیدہ رنگ کا لے کر قبر میں جائیں.

عامر راہداری

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s